اہم خبریں

پکڑے جانے والےکالعدم ٹی ٹی پی کے ترجمان احسان اللہ احسان نے ہارون بلورشہید کے بارے میں کیا کہا تھا؟ ایسا انکشاف کہ ہر پاکستانی کو غصہ آ جائے

  بدھ‬‮ 11 جولائی‬‮ 2018  |  17:23
پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک)گزشتہ روز اے این پی کی کارنر میٹنگ میں ہونیوالے خودکش حملے میں بشیر احمد بلور کے بیٹے اور اے این پی کے انتخابی امیدوار ہارون بلور دیگر 20افراد کے ہمراہ شہید ہو گئے ہیں۔ ۔ خودکش حملے میں ہارون بلور کی موت پر کالعدم تحریک طالبان پاکستان کا 2013ءمیں جاری ہونے والا ایک بیان منظرعام پر آیا ہے۔ پاکستان کے مؤقر انگریزی اخبار ڈان کی رپورٹ کے مطابق بشیر بلور پر ہونے والے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کالعدم ٹی ٹی پی کے ترجمان احسان اللہ احسان نے کہا تھا کہ”ہمارا اصل ٹارگٹ ہارون بلور تھے

(خبر جا ری ہے)

سے غلام احمد بلور زخمی ہو گئے۔“واضح رہے کہ ہارون بلور غلام احمد بلور کے بھتیجے اور ہارون بلور کے والد اور کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے ہاتھوں خودکش حملے میں شہید ہونیوالے بشیر احمد بلور کے بھائی تھے ۔ غلام احمد بلور بھی ایک حملے میں زخمی ہو چکے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق احسان اللہ احسان، جو بعدازاں پکڑا گیا تھا، کے اس بیان سے ظاہر ہوتا ہے کہ کالعدم ٹی ٹی پی کتنے عرصے سے ہارون بلور کو نشانہ بنانا چاہتی تھی ۔

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک)گزشتہ روز اے این پی کی کارنر میٹنگ میں ہونیوالے خودکش حملے میں بشیر احمد بلور کے بیٹے اور اے این پی کے انتخابی امیدوار ہارون بلور دیگر 20افراد کے ہمراہ شہید ہو گئے ہیں۔ ۔ خودکش حملے میں ہارون بلور کی موت پر کالعدم تحریک طالبان پاکستان کا 2013ءمیں جاری ہونے والا ایک بیان منظرعام پر آیا ہے۔ پاکستان کے مؤقر انگریزی اخبار ڈان کی رپورٹ کے مطابق بشیر بلور پر ہونے والے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کالعدم ٹی ٹی پی کے ترجمان احسان اللہ احسان نے کہا تھا

کہ”ہمارا اصل ٹارگٹ ہارون بلور تھے تاہم بدقسمتی سے غلام احمد بلور زخمی ہو گئے۔“واضح رہے کہ ہارون بلور غلام احمد بلور کے بھتیجے اور ہارون بلور کے والد اور کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے ہاتھوں خودکش حملے میں شہید ہونیوالے بشیر احمد بلور کے بھائی تھے ۔ غلام احمد بلور بھی ایک حملے میں زخمی ہو چکے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق احسان اللہ احسان، جو بعدازاں پکڑا گیا تھا، کے اس بیان سے ظاہر ہوتا ہے کہ کالعدم ٹی ٹی پی کتنے عرصے سے ہارون بلور کو نشانہ بنانا چاہتی تھی ۔

موضوعات:

loading...

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں