اہم خبریں

مودی بھارت کا کمانڈر ان چیف نہیں بلکہ کیا ہے؟راہول گاندھی نے ایسی بات کہہ دی جسے جان کر آپ حیران رہ جائیں گے

  منگل‬‮ 25 ستمبر‬‮ 2018  |  19:26
نئی دہلی (آن لائن)بھارتی اپوزیشن جماعت کانگریس کے سربراہ راہول گاندھی نے کہا ہے کہ نریندر مودی کمانڈر انچیف نہیں ’’تھیف‘‘ ہیں ۔ بھارتی اخبار کے مطابق سابق فرانسیسی صدر اولاند کے رافیل طیاروں کے معاہدے کے حوالے سے انکشاف کے بعد مودی حکومت پر دباؤ بڑھتا جا رہا ہے ۔راہول نے اپنی ٹویٹ میں مودی کو ’’بھارت کے چوروں کا کمانڈر ‘‘قرار دیا اور ساتھ ایک فرانسیسی ویب سائٹ کی ویڈیو اپ لوڈ کی جس میں بتایا گیا کہ معاہدے کیلئے مودی حکومت نے انیل امبانی کی کمپنی کا بطور شراکت دار تجویز کیا تھا۔ اس ویڈیو کی اہم

(خبر جا ری ہے)

ہے کہ اس میں فرانس کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ ہمارے پاس کوئی راستہ نہیں تھا۔ مودی حکومت نے اس کمپنی کا نام تجویز کیا اور فرانسیسی کمپنی نے انیل امبانی سے معاملات طے کئے ۔ انہوں نے کہاکہ بھارت میں چوکیدار چور بن گیا،عوام کی جیب پرڈاکا ڈالا،غریب عوام کی کمائی بزنس مین انیل امبانی پر لٹادی۔ راہول گاندھی کہا کہ نریندرمودی رافیل ڈیل کو منظرعام پر کیوں نہیں لاتے۔ بتایا جائے انیل امبانی کو ٹھیکہ کیوں دیاگیا۔راہول گاندھی نے نریندرمودی پر ایک لاکھ تیس کروڑ روپے کی چوری کاالزام لگایا۔ راہول گاندھی نے دفاعی معاہدے کوبھارتی فوج پرسرجیکل اسٹرائیک قراردیا۔ انہوں نے کہاکہ بی جے پی حکومت نے 2016 میں فرانس سے 36 لڑاکا رافیل طیارے خریدنے کا معاہدے کیا تھا جس کی مالیت 8 اعشاریہ 7 ارب ڈالر تھی، معاہدے میں فرانسیسی کمپنی کی جانب سے بھارتی کمپنی کے ساتھ مل کر بھارت میں طیارے کے پرزے بنانے کے کارخانے لگانے کی شق بھی شامل تھی۔

نئی دہلی (آن لائن)بھارتی اپوزیشن جماعت کانگریس کے سربراہ راہول گاندھی نے کہا ہے کہ نریندر مودی کمانڈر انچیف نہیں ’’تھیف‘‘ ہیں ۔ بھارتی اخبار کے مطابق سابق فرانسیسی صدر اولاند کے رافیل طیاروں کے معاہدے کے حوالے سے انکشاف کے بعد مودی حکومت پر دباؤ بڑھتا جا رہا ہے ۔راہول نے اپنی ٹویٹ میں مودی کو ’’بھارت کے چوروں کا کمانڈر ‘‘قرار دیا اور

ساتھ ایک فرانسیسی ویب سائٹ کی ویڈیو اپ لوڈ کی جس میں بتایا گیا کہ معاہدے کیلئے مودی حکومت نے انیل امبانی کی کمپنی کا بطور شراکت دار تجویز کیا تھا۔ اس ویڈیو کی اہم بات یہ ہے کہ اس میں فرانس کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ ہمارے پاس کوئی راستہ نہیں تھا۔ مودی حکومت نے اس کمپنی کا نام تجویز کیا اور فرانسیسی کمپنی نے انیل امبانی سے معاملات طے کئے ۔ انہوں نے کہاکہ بھارت میں چوکیدار چور بن گیا،عوام کی جیب پرڈاکا ڈالا،غریب عوام کی کمائی بزنس مین انیل امبانی پر لٹادی۔ راہول گاندھی کہا کہ نریندرمودی رافیل ڈیل کو منظرعام پر کیوں نہیں لاتے۔ بتایا جائے انیل امبانی کو ٹھیکہ کیوں دیاگیا۔راہول گاندھی نے نریندرمودی پر ایک لاکھ تیس کروڑ روپے کی چوری کاالزام لگایا۔ راہول گاندھی نے دفاعی معاہدے کوبھارتی فوج پرسرجیکل اسٹرائیک قراردیا۔ انہوں نے کہاکہ بی جے پی حکومت نے 2016 میں فرانس سے 36 لڑاکا رافیل طیارے خریدنے کا معاہدے کیا تھا جس کی مالیت 8 اعشاریہ 7 ارب ڈالر تھی، معاہدے میں فرانسیسی کمپنی کی جانب سے بھارتی کمپنی کے ساتھ مل کر بھارت میں طیارے کے پرزے بنانے کے کارخانے لگانے کی شق بھی شامل تھی۔

loading...

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں