اہم خبریں

بھارت کا پاکستان سے ملحقہ سرحد پر بلٹ پروف شیشے کی دیواریں بنانے کا فیصلہ

  منگل‬‮ 10 فروری‬‮ 2015  |  12:15
نئی دلی - بھارت اٹاری کے مقام پر بلٹ پروف گیٹ لگائے گا۔ بھارت نے یہ فیصلہ واہگہ بارڈر پر خودکش حملے کے تناظر میں کیا ہے۔ بھارت بلٹ پروف شیشے کی دیواریں اٹاری کے ساتھ ساتھ حسین آباد، فیروز پور اور سٹرقی کی بین الاقوامی سرحدی چوکیوں پر بھی نصب کرے گا۔ اخبار 148ٹائمز آف انڈیا147 کے مطابق پاکستان میں واہگہ بارڈر پر خودکش حملے کے بعد بھارت کی بارڈر سیکیورٹی فورس نے بین الاقوامی سرحد پر بلٹ پروف گیٹس تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تقسیم ہند کے بعد پہلی بار بھارت کی بارڈر فورس نے سیاحوں کی حفاظت

(خبر جا ری ہے)

حفاظت کیلئے اٹاری کے مقام پر زمینی سرحدی گیٹس کے سامنے رولنگ بلٹ پروف سیکرینز نصب کی ہیں۔ یہ سکرینز کسی بھی خودکش دھماکے کی صورت میں بارودی مواد سے سیاحوں کو محفوظ بنائیں گی۔ بی ایس ایف کے ڈپٹی انسپکٹر جنرل امرتسر سیکٹر ایم ایف فاروقی نے اخبار سے کہا کہ ہم ان (پاک رینجرز) سیکیورٹی انتظامات پر انحصار نہیں کر سکتے۔ دس سے پندرہ ہزار سیاح اٹاری کے مقام پر روزانہ تقریب دیکھنے آتے ہیں۔ اٹاری پر سرحد کے دونوں کناروں پر بلٹ پروف گلاس نصب کرنے کی تجویز دی ہے تاکہ اگر پاکستان میں کوئی دھماکہ ہو تو دھماکہ خیز مواد براہ راست ان کو متاثر نہ کرے۔ اخبار کے مطابق نومبر 2014ءکو واہگہ بارڈر پر خودکش دھماکے میں 60 پاکستانی شہید ہو گئے تھے۔

نئی دلی – بھارت اٹاری کے مقام پر بلٹ پروف گیٹ لگائے گا۔ بھارت نے یہ فیصلہ واہگہ بارڈر پر خودکش حملے کے تناظر میں کیا ہے۔ بھارت بلٹ پروف شیشے کی دیواریں اٹاری کے ساتھ ساتھ حسین آباد، فیروز پور اور سٹرقی کی بین الاقوامی سرحدی چوکیوں پر بھی نصب کرے گا۔ اخبار 148ٹائمز آف انڈیا147 کے مطابق پاکستان میں واہگہ بارڈر پر خودکش حملے کے بعد بھارت کی بارڈر سیکیورٹی فورس نے بین الاقوامی سرحد پر بلٹ پروف گیٹس تعمیر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ تقسیم ہند کے بعد پہلی بار بھارت کی بارڈر فورس نے سیاحوں کی حفاظت کیلئے اٹاری کے مقام پر زمینی سرحدی گیٹس کے سامنے رولنگ بلٹ پروف سیکرینز نصب کی ہیں۔ یہ سکرینز کسی بھی خودکش دھماکے کی صورت میں بارودی مواد سے سیاحوں کو محفوظ بنائیں گی۔ بی ایس ایف کے ڈپٹی انسپکٹر جنرل امرتسر سیکٹر ایم ایف فاروقی نے اخبار سے کہا کہ ہم ان (پاک رینجرز) سیکیورٹی انتظامات پر انحصار نہیں کر سکتے۔ دس سے پندرہ ہزار سیاح اٹاری کے مقام پر روزانہ تقریب دیکھنے آتے ہیں۔ اٹاری پر سرحد کے دونوں کناروں پر بلٹ پروف گلاس نصب کرنے کی تجویز دی ہے تاکہ اگر پاکستان میں کوئی دھماکہ ہو تو دھماکہ خیز مواد براہ راست ان کو متاثر نہ کرے۔ اخبار کے مطابق نومبر 2014ءکو واہگہ بارڈر پر خودکش دھماکے میں 60 پاکستانی شہید ہو گئے تھے۔

loading...

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں