اہم خبریں

ہائی کورٹ نے پرویز مشرف کے خلاف غازی عبدالرشید قتل کیس خارج کرنے کی درخواست مسترد کرنے کا تحریری فیصلہ جاری کر دیا

  ہفتہ‬‮ 12 اکتوبر‬‮ 2019  |  17:02
اسلام آباد (این این آئی) اسلام آباد ہائی کورٹ نے پرویز مشرف کے خلاف غازی عبدالرشید قتل کیس خارج کرنے کی درخواست مسترد کرنے کا تحریری فیصلہ جاری کر دیا ۔ہفتہ کو اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے 2صفحات پر مشتمل تحریری فیصلہ جاری کیا۔ تحریری فیصلہ میں کہاگیاکہ پرویز مشرف کے خلاف درج مقدمہ خارج کرنے کی درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر مسترد کی جاتی ہے، مقدمہ کیاخراج کے لیے پاکستان سوشل جسٹس پارٹی نے درخواست دائر کی۔ فیصلہ میں کہاگیاکہ پٹیشنر رجسٹرڈ سیاسی جماعت ہونے کے باوجود متاثرہ فریق اور حق دعوی

(خبر جا ری ہے)

پر عدالت کو مطمئن نہ کر سکی۔ عدالت نے کہاکہ پرویز مشرف کے خلاف مقدمہ میں کوئی سیاسی جماعت متاثرہ فریق کیسے ہو سکتی ہے؟ ۔ تحریری فیصلے میں کہاگیاکہ عدالت کو مطمئن نہیں کیا جا سکا کہ رجسٹرڈ سیاسی جماعت کسی دوسرے شخص کے خلاف مقدمہ خارج کرانے کا حق رکھتی ہے۔تحریری فیصلے میں کہاگیاکہ تسلیم شدہ حقیقت ہے کہ پرویز مشرف قانون کی نظر میں مفرور ملزم ہے۔‎

اسلام آباد (این این آئی) اسلام آباد ہائی کورٹ نے پرویز مشرف کے خلاف غازی عبدالرشید قتل کیس خارج کرنے کی درخواست مسترد کرنے کا تحریری فیصلہ جاری کر دیا ۔ہفتہ کو اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے 2صفحات پر مشتمل تحریری فیصلہ جاری کیا۔ تحریری فیصلہ میں کہاگیاکہ پرویز مشرف کے خلاف درج مقدمہ خارج کرنے کی درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر مسترد کی جاتی ہے، مقدمہ کیاخراج کے لیے پاکستان سوشل جسٹس پارٹی نے درخواست دائر کی۔ فیصلہ میں کہاگیاکہ پٹیشنر رجسٹرڈ سیاسی جماعت ہونے کے باوجود متاثرہ فریق اور حق دعوی حاصل

ہونے پر عدالت کو مطمئن نہ کر سکی۔ عدالت نے کہاکہ پرویز مشرف کے خلاف مقدمہ میں کوئی سیاسی جماعت متاثرہ فریق کیسے ہو سکتی ہے؟ ۔ تحریری فیصلے میں کہاگیاکہ عدالت کو مطمئن نہیں کیا جا سکا کہ رجسٹرڈ سیاسی جماعت کسی دوسرے شخص کے خلاف مقدمہ خارج کرانے کا حق رکھتی ہے۔تحریری فیصلے میں کہاگیاکہ تسلیم شدہ حقیقت ہے کہ پرویز مشرف قانون کی نظر میں مفرور ملزم ہے۔‎

loading...