اہم خبریں

محمد حفیظ نے وقار یونس کا ریٹائرمنٹ کا مشورہ مسترد کر دیا

  بدھ‬‮ 10 جولائی‬‮ 2019  |  16:33
لاہور( آن لائن )آل رانڈر محمد حفیظ نے ریٹائرمنٹ کے حوالے سے وقار یونس کا مشورہ مسترد کر دیا۔ورلڈکپ کیساتھ ہی شعیب ملک کا ون ڈے کیریئر اختتام کو پہنچ گیا، سابق ٹیسٹ پیسر وقار یونس نے ایک اور سینئر آل رانڈر محمد حفیظ کو بھی یہی مشورہ دیا تھاکہ ان کے لیے اب ریٹائر ہونا مناسب رہے گا البتہ حفیظ ایسا کوئی ارادہ نہیں رکھتے، انگلینڈ سے وطن واپسی کے بعد وہ تمام وقت اہل خانہ کیساتھ گزار رہے ہیں۔ ذرائع کے مطابق حفیظ نے کوچ سمیت اعلی حکام پر واضح کر دیا کہ وہ مکمل فٹ اور اپنی

(خبر جا ری ہے)

بھی مطمئن ہیں، اس لیے ملک کی مزید نمائندگی کرنا چاہتے ہیں،البتہ ان کے مستقبل کا فیصلہ نئی سلیکشن کمیٹی ہی کرے گی،حفیظ اپنی کارکردگی میں عدم تسلسل کی وجہ بیٹنگ آرڈر میں مسلسل چھیڑ چھاڑ کو قرار دیتے ہیں۔اوپننگ نہ کرنے کے باعث ان کی بیٹنگ متاثر ہوئی، بنگلہ دیش کیخلاف میچ سے قبل انھوں نے ٹیم مینجمنٹ سے اوپننگ کرانے کا بھی کہا تھا مگر ان کی بات نہیں مانی گئی،انھوں نے ٹیم مینجمنٹ سے یہ بھی کہا کہ جس وقت سمجھا ان سے کوئی اچھا کھلاڑی آگیا ہے تو از خود کرکٹ چھوڑ دیں گے، البتہ فی الحال انھیں نہیں لگتا کہ کوئی نوجوان ان کی جگہ سنبھالنے کیلئے تیار ہے۔واضح رہے کہ ورلڈکپ کے 8 میچز میں محمد حفیظ نے 31.62 کی اوسط سے 253 رنز بنائے، انھوں نے واحد نصف سنچری انگلینڈ کیخلاف سکور کی،84رنز کی اننگزنے ٹیم کی فتح میں اہم کردار ادا کیا تھا،38سالہ حفیظ نے گذشتہ برس دسمبر میں ٹیسٹ کرکٹ کو خیرباد کہہ دیا تھا۔

لاہور( آن لائن )آل رانڈر محمد حفیظ نے ریٹائرمنٹ کے حوالے سے وقار یونس کا مشورہ مسترد کر دیا۔ورلڈکپ کیساتھ ہی شعیب ملک کا ون ڈے کیریئر اختتام کو پہنچ گیا، سابق ٹیسٹ پیسر وقار یونس نے ایک اور سینئر آل رانڈر محمد حفیظ کو بھی یہی مشورہ دیا تھاکہ ان کے لیے اب ریٹائر ہونا مناسب رہے گا البتہ حفیظ ایسا کوئی ارادہ نہیں رکھتے، انگلینڈ سے وطن واپسی کے بعد وہ تمام وقت اہل خانہ کیساتھ گزار رہے ہیں۔ ذرائع کے مطابق حفیظ نے کوچ سمیت اعلی حکام پر واضح کر دیا کہ وہ مکمل فٹ اور اپنی کارکردگی

سے بھی مطمئن ہیں، اس لیے ملک کی مزید نمائندگی کرنا چاہتے ہیں،البتہ ان کے مستقبل کا فیصلہ نئی سلیکشن کمیٹی ہی کرے گی،حفیظ اپنی کارکردگی میں عدم تسلسل کی وجہ بیٹنگ آرڈر میں مسلسل چھیڑ چھاڑ کو قرار دیتے ہیں۔اوپننگ نہ کرنے کے باعث ان کی بیٹنگ متاثر ہوئی، بنگلہ دیش کیخلاف میچ سے قبل انھوں نے ٹیم مینجمنٹ سے اوپننگ کرانے کا بھی کہا تھا مگر ان کی بات نہیں مانی گئی،انھوں نے ٹیم مینجمنٹ سے یہ بھی کہا کہ جس وقت سمجھا ان سے کوئی اچھا کھلاڑی آگیا ہے تو از خود کرکٹ چھوڑ دیں گے، البتہ فی الحال انھیں نہیں لگتا کہ کوئی نوجوان ان کی جگہ سنبھالنے کیلئے تیار ہے۔واضح رہے کہ ورلڈکپ کے 8 میچز میں محمد حفیظ نے 31.62 کی اوسط سے 253 رنز بنائے، انھوں نے واحد نصف سنچری انگلینڈ کیخلاف سکور کی،84رنز کی اننگزنے ٹیم کی فتح میں اہم کردار ادا کیا تھا،38سالہ حفیظ نے گذشتہ برس دسمبر میں ٹیسٹ کرکٹ کو خیرباد کہہ دیا تھا۔

loading...