اہم خبریں

پاکستان اسٹاک ایکس چینج زمیں پر آگری سرمایہ کار کنگال ، 245ارب سے زائد ڈوب گئے

  اتوار‬‮ 12 مئی‬‮‬‮ 2019  |  17:04
کراچی(این این آئی)پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں گذشتہ ہفتے کاروبار حصص مسلسل مندی کی لپیٹ میں رہااور کے ایس ای100انڈیکس 1400پوائنٹس گھٹ گیاجس سے انڈیکس36ہزاراور35ہزار پوائنٹ کی دو نفسیاتی حد سے نیچے گر گیا ،مندی کے سبب مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کے 245ارب روپے بھی ڈوب گئے ۔ سرمائے کا مجموعی حجم73کھرب روپے سے گھٹ کر 71کھرب روپے کی کم ترین سطح پر آگیا ۔کاروبار کے لحاظ سے میپل لیف ،بینک آف پنجاب ،یونٹی فوڈز ،فوجی سیمنٹ،یونائیٹڈ بینک ،انٹر نیشنل اسٹیل لمیٹڈ ،پاک الیکٹرون ،پاک انٹر نیشنل بلک ،ورلڈ کال ٹیلی کام ،اینگرو فرٹیلائزر ، کے الیکٹرک لمیٹڈ ،سوئی نادرن

(خبر جا ری ہے)

پاور ،لوٹے کیمیکل ،بینک الفلاح ،پائینر سیمنٹ ،آئل اینڈ گیس ڈیولپمنٹ مغل آئرن ،دی سرل کمپنی اور ڈولمن سٹی سر فہرست رہے۔اسٹاک ماہرین کے مطابق جی ڈی پی کی شرح میں اضافے کے اہداف حاصل نہ ہونے اور شرح ہدف کے مقابلے نصف رہنے ،آئندہ 7برسوں میں 31ارب ڈالر کی بیرونی قرضوں کی ادائیگی ،حکومت کی آئی ایم ایف کو اگلے بجٹ میں 750ارب روپے کے اضافی ٹیکس کی یقین دہانی جیسی خبروں پر سرمایہ کار تذبذب کا شکار رہے اور انہوں نے نئی سرمایہ کاری کے بجائے پرافٹ ٹیکنگ کو ترجیح دی جس کی وجہ سے اسٹاک مارکیٹ گذشتہ ہفتے بدترین تنزلی کا شکار رہی ۔پاکستا ن اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ ہفتے کاروبار کا آغاز ہی مندی سے ہوا اور مندی کا رجحان4دن غالب رہا جس کی وجہ سے انڈیکس 1432.06پوائنٹس کم ہو گیا جبکہ ایک روزہ تیزی سے انڈیکس نے 25.64پوائنٹس ریکور کئے تاہم مجموعی طور پر مارکیٹ مندی کی زدمیں رہی ۔ پاکستان اسٹا ک مارکیٹ کی ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق گذشتہ ایک ہفتے کے دوران مندی کے سبب کے ایس ای100انڈیکس میں 1406.42پوائنٹس کی کمی ریکارڈ کی گئی جس سے انڈیکس 36122.95پوائنٹس سے کم ہو کر34716.53پوائنٹس ہو گیا اسی طرح 690.81پوائنٹس کی کمی سے کے ایس ای 30انڈیکس 17077.47پوائنٹس سے کم ہو کر16386.66پوائنٹس پر آگیا جبکہ کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 26537.79پوائنٹس سے گھٹ کر 25693.07پوائنٹس ہوگیا ۔ مندی کے سبب گذشتہ ایک ہفتے کے دوران مارکیٹ کے سرمائے میں 2کھرب 45ارب 25کروڑ25لاکھ 80ہزار374روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم 73کھرب 71ارب 61کروڑ84لاکھ 53ہزار231روپے سے گھٹ کر71کھرب 26ارب 36کروڑ58لاکھ72ہزار857روپے رہ گیا ۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ ہفتے ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای 100انڈیکس 36192.05پوائنٹس کی بلند سطح کو چھو گیا تھا تاہم مندی کی لہر آنے سے انڈیکس 34828.94پوائنٹس کی کم سطح آگیا ۔ گذشتہ ہفتے زیادہ سے زیادہ4ار ب روپے مالیت کے 11کروڑ32لاکھ35ہزار حصص کے سودے ہوئے جبکہ کم سے کم 2ارب روپے مالیت کے 6کروڑ53لاکھ63ہزار حصص کے سودے ہوئے تھے ۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ ہفتے مجموعی طور پر 1533کمپنیوں کا کاروبار ہوا جس میں سے 392کمپنیوں کے حصص کی قیمتو ں میں اضافہ ،1049میں کمی اور92کمپنیوں کے حصص کی قیمتو ں میں استحکام رہا ۔

کراچی(این این آئی)پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں گذشتہ ہفتے کاروبار حصص مسلسل مندی کی لپیٹ میں رہااور کے ایس ای100انڈیکس 1400پوائنٹس گھٹ گیاجس سے انڈیکس36ہزاراور35ہزار پوائنٹ کی دو نفسیاتی حد سے نیچے گر گیا ،مندی کے سبب مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کے 245ارب روپے بھی ڈوب گئے ۔ سرمائے کا مجموعی حجم73کھرب روپے سے گھٹ کر 71کھرب روپے کی کم ترین سطح پر آگیا ۔کاروبار کے لحاظ سے میپل لیف ،بینک آف پنجاب ،یونٹی فوڈز ،فوجی سیمنٹ،یونائیٹڈ بینک ،انٹر نیشنل اسٹیل لمیٹڈ ،پاک الیکٹرون ،پاک انٹر نیشنل بلک ،ورلڈ کال ٹیلی کام ،اینگرو فرٹیلائزر ،

کے الیکٹرک لمیٹڈ ،سوئی نادرن گیس حب پاور ،لوٹے کیمیکل ،بینک الفلاح ،پائینر سیمنٹ ،آئل اینڈ گیس ڈیولپمنٹ مغل آئرن ،دی سرل کمپنی اور ڈولمن سٹی سر فہرست رہے۔اسٹاک ماہرین کے مطابق جی ڈی پی کی شرح میں اضافے کے اہداف حاصل نہ ہونے اور شرح ہدف کے مقابلے نصف رہنے ،آئندہ 7برسوں میں 31ارب ڈالر کی بیرونی قرضوں کی ادائیگی ،حکومت کی آئی ایم ایف کو اگلے بجٹ میں 750ارب روپے کے اضافی ٹیکس کی یقین دہانی جیسی خبروں پر سرمایہ کار تذبذب کا شکار رہے اور انہوں نے نئی سرمایہ کاری کے بجائے پرافٹ ٹیکنگ کو ترجیح دی جس کی وجہ سے اسٹاک مارکیٹ گذشتہ ہفتے بدترین تنزلی کا شکار رہی ۔پاکستا ن اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ ہفتے کاروبار کا آغاز ہی مندی سے ہوا اور مندی کا رجحان4دن غالب رہا جس کی وجہ سے انڈیکس 1432.06پوائنٹس کم ہو گیا جبکہ ایک روزہ تیزی سے انڈیکس نے 25.64پوائنٹس ریکور کئے تاہم مجموعی طور پر مارکیٹ مندی کی زدمیں رہی ۔ پاکستان اسٹا ک مارکیٹ کی ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق گذشتہ ایک ہفتے کے دوران مندی کے سبب کے ایس ای100انڈیکس میں 1406.42پوائنٹس کی کمی ریکارڈ کی گئی جس سے انڈیکس 36122.95پوائنٹس سے کم ہو کر34716.53پوائنٹس ہو گیا اسی طرح 690.81پوائنٹس کی کمی سے کے ایس ای 30انڈیکس 17077.47پوائنٹس سے کم ہو کر16386.66پوائنٹس پر آگیا جبکہ کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 26537.79پوائنٹس سے گھٹ کر 25693.07پوائنٹس ہوگیا ۔ مندی کے سبب گذشتہ ایک ہفتے کے دوران مارکیٹ کے سرمائے میں 2کھرب 45ارب 25کروڑ25لاکھ 80ہزار374روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم 73کھرب 71ارب 61کروڑ84لاکھ 53ہزار231روپے سے گھٹ کر71کھرب 26ارب 36کروڑ58لاکھ72ہزار857روپے رہ گیا ۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ ہفتے ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای 100انڈیکس 36192.05پوائنٹس کی بلند سطح کو چھو گیا تھا تاہم مندی کی لہر آنے سے انڈیکس 34828.94پوائنٹس کی کم سطح آگیا ۔ گذشتہ ہفتے زیادہ سے زیادہ4ار ب روپے مالیت کے 11کروڑ32لاکھ35ہزار حصص کے سودے ہوئے جبکہ کم سے کم 2ارب روپے مالیت کے 6کروڑ53لاکھ63ہزار حصص کے سودے ہوئے تھے ۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ ہفتے مجموعی طور پر 1533کمپنیوں کا کاروبار ہوا جس میں سے 392کمپنیوں کے حصص کی قیمتو ں میں اضافہ ،1049میں کمی اور92کمپنیوں کے حصص کی قیمتو ں میں استحکام رہا ۔

loading...

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں