اہم خبریں

پاکستانیوں کیلئے شاندار خبر، حکومت نے عوام کی ضرورت کی کیا چیز سستی کرنے کا اعلان کر دیا، جان کر آپ کو بھی یقین نہیں آئیگا

  بدھ‬‮ 5 دسمبر‬‮ 2018  |  18:30
اسلام آباد (نیوز ڈیسک)وفاقی وزیر پٹرولیم غلام سرور خان نے کہا ہے کہ ایل پی جی غریب آدمی کا ایندھن ہے،عام صارف کو ریلیف دینا چاہئے ۔ بدھ کو وفاقی وزیر پٹرولیم غلام سرور خان کی زیر صدارت کیبنٹ کمیٹی برائے توانائی کا اجلاس منعقد ہوا ۔ اجلاس میں وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد ،وفاقی وزیرخزانہ اسد عمر،وفاقی وزیر پاورعمر ایوب خان ،وفاقی وزیر پلاننگ خسروبختیار ، ایڈوائزر ٹو پرائم منسٹر برائے کامرس اور انڈسٹریز عبدالرزاق داؤد بھی موجود تھے۔ اجلاس میں وفاقی وزیر پٹرولیم نے کہا کہ ایل پی جی غریب آدمی کا ایندھن ہے،عام صارف کو ریلیف

(خبر جا ری ہے)

جس پر کمیٹی میں طے پایا کہ ایل پی جی کی قیمت میں کمی برقرار رکھی جائیگی اور فرنس آئل کی درآمد بند کی جائیگی۔ اجلاس میں آئل ریفائنریز کے مسائل سننے کے بعد طے پایا کہ فی الحال آئل ریفائنریز اپنی پوری صلاحیت کیساتھ کام کریں،3ماہ کی سٹوریج کیلئے پاور سیکٹر بھی ریفائنریز کی مدد کریگامگر آئل ریفائنریز کو اپنے آپ کو اپ گریڈ کرنے کی اشد ضرورت ہے۔وفاقی وزیر نے بابر ندیم کی زیرصدارت آئل ریفائنریز کے مسائل کے حل کیلئے ایک ٹاسک فورس قائم کردی جو اگلے اجلاس میں اپنی سفارشات پیش کریگی ، آئل ریفائنریز کو اپنی برآمدات کیلئے راہیں تلاش کرنے کا مشورہ دیا گیاہے۔ اجلاس میں یہ بھی طے پایا کہ پاور پلانٹس کا میرٹ آرڈر مختلف نہیں کیا جائیگاوفاقی وزیر نے بابر ندیم کی زیرصدارت آئل ریفائنریز کے مسائل کے حل کیلئے ایک ٹاسک فورس قائم کردی جو اگلے اجلاس میں اپنی سفارشات پیش کریگی ، آئل ریفائنریز کو اپنی برآمدات کیلئے راہیں تلاش کرنے کا مشورہ دیا گیاہے۔ اجلاس میں یہ بھی طے پایا کہ پاور پلانٹس کا میرٹ آرڈر مختلف نہیں کیا جائیگا تاکہ کنزیومر کو سستی اور اچھی بجلی فراہم کی جا سکے۔پاور ڈویڑن کی مانگ اور ایس این جی پی ایل کی فراہمی کیلئے ایک ایس او پی بھی بنایا جائیگاجو کیبنٹ کمیٹی برائے توانائی میں ہی پیش کیا جائیگااور اس کمیٹی کے حتمی فیصلے کے بعد ایس او پی کی توثیق کیبنٹ سے کرائی جائیگی۔

اسلام آباد (نیوز ڈیسک)وفاقی وزیر پٹرولیم غلام سرور خان نے کہا ہے کہ ایل پی جی غریب آدمی کا ایندھن ہے،عام صارف کو ریلیف دینا چاہئے ۔ بدھ کو وفاقی وزیر پٹرولیم غلام سرور خان کی زیر صدارت کیبنٹ کمیٹی برائے توانائی کا اجلاس منعقد ہوا ۔ اجلاس میں وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد ،وفاقی وزیرخزانہ اسد عمر،وفاقی وزیر پاورعمر ایوب خان ،وفاقی وزیر پلاننگ خسروبختیار ، ایڈوائزر ٹو پرائم منسٹر برائے کامرس اور انڈسٹریز عبدالرزاق داؤد بھی موجود تھے۔

اجلاس میں وفاقی وزیر پٹرولیم نے کہا کہ ایل پی جی غریب آدمی کا ایندھن ہے،عام صارف کو ریلیف دینا چاہئے جس پر کمیٹی میں طے پایا کہ ایل پی جی کی قیمت میں کمی برقرار رکھی جائیگی اور فرنس آئل کی درآمد بند کی جائیگی۔ اجلاس میں آئل ریفائنریز کے مسائل سننے کے بعد طے پایا کہ فی الحال آئل ریفائنریز اپنی پوری صلاحیت کیساتھ کام کریں،3ماہ کی سٹوریج کیلئے پاور سیکٹر بھی ریفائنریز کی مدد کریگامگر آئل ریفائنریز کو اپنے آپ کو اپ گریڈ کرنے کی اشد ضرورت ہے۔وفاقی وزیر نے بابر ندیم کی زیرصدارت آئل ریفائنریز کے مسائل کے حل کیلئے ایک ٹاسک فورس قائم کردی جو اگلے اجلاس میں اپنی سفارشات پیش کریگی ، آئل ریفائنریز کو اپنی برآمدات کیلئے راہیں تلاش کرنے کا مشورہ دیا گیاہے۔ اجلاس میں یہ بھی طے پایا کہ پاور پلانٹس کا میرٹ آرڈر مختلف نہیں کیا جائیگاوفاقی وزیر نے بابر ندیم کی زیرصدارت آئل ریفائنریز کے مسائل کے حل کیلئے ایک ٹاسک فورس قائم کردی جو اگلے اجلاس میں اپنی سفارشات پیش کریگی ، آئل ریفائنریز کو اپنی برآمدات کیلئے راہیں تلاش کرنے کا مشورہ دیا گیاہے۔ اجلاس میں یہ بھی طے پایا کہ پاور پلانٹس کا میرٹ آرڈر مختلف نہیں کیا جائیگا تاکہ کنزیومر کو سستی اور اچھی بجلی فراہم کی جا سکے۔پاور ڈویڑن کی مانگ اور ایس این جی پی ایل کی فراہمی کیلئے ایک ایس او پی بھی بنایا جائیگاجو کیبنٹ کمیٹی برائے توانائی میں ہی پیش کیا جائیگااور اس کمیٹی کے حتمی فیصلے کے بعد ایس او پی کی توثیق کیبنٹ سے کرائی جائیگی۔

loading...

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں