اہم خبریں

جوڈیشل کمیشن کی سیل رپورٹ وزیراعظم سے پہلے کیسے لیک ہوگئی ؟ تہلکہ انگیزانکشاف

  جمعرات‬‮ 23 جولائی‬‮ 2015  |  16:17
اسلام آباد(نیوز ڈیسک) جوڈیشل کمیشن کی الیکشن میں مبینی دھاندلی کی رپورٹ کے اہم مندرجات گزشتہ شام ہی میڈیاکے ہاتھ لگ گئے تھے جبکہ اب یہ بات علم میں آئی ہے کہ ان مندرجات کا کسی کو علم نہیں تھا یا پھر مسلم لیگ ن کے وکیل شاہد حامد کے ذریعے میڈیا تک پہنچائے گئے ہیں اوراسی وجہ سے کچھ لوگ رپورٹ پر اپنے تحفظات کا اظہار بھی کررہے ہیں۔جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ کے مندرجات میڈیاکے ہاتھ آنے پرسینئر صحافی حامد میر نے انکشاف کیاکہ سیکریٹری لاءاینڈ جسٹس ریٹائرڈ رضانے کہا ہے کہ ا±نہوں نے جوڈیشل کمیشن کی سیل رپورٹ

(خبر جا ری ہے)

حکومت کو ارسال کی ہے اور اس کے مندرجات سے متعلق معلوم نہیں۔حامد میر نے اپنے ٹوئیٹس میں لکھاکہ مسلم لیگ ن کے وکیل شاہد حامد جوڈیشل کمیشن رپورٹ کا بڑا ذریعہ ہیں ، دوسراسیکریٹری لاءہیں لیکن وہ بہت محتاط ہیں ،جوڈیشل کمیشن نے سیل رپورٹ وزیراعظم کو بھجوائی ہے مزیدپڑھیے:افتخارمحمدچوہدری کی سیاست میں آنے کی تیاریاں اورانہوں نے کبھی نہیں پڑی حتیٰ کہ یہ کوئی پبلک ڈاکیومنٹ نہ ہوتو، اگر وزیراعظم ہاﺅس تک پہنچنے سے پہلے رپورٹ میڈیا تک پہنچ گئی ہے تو سسٹم میں کچھ خرابی ہے ، وفاقی حکومت کے ذرائع نے دعویٰ کیاکہ شاہد حامد نے کبھی رپورٹ نہیں دیکھی لیکن اس رپورٹ کے بارے میں وزیراعظم جمعرات کے روز اہم بیان جاری کرسکتے ہیں ۔

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) جوڈیشل کمیشن کی الیکشن میں مبینی دھاندلی کی رپورٹ کے اہم مندرجات گزشتہ شام ہی میڈیاکے ہاتھ لگ گئے تھے جبکہ اب یہ بات علم میں آئی ہے کہ ان مندرجات کا کسی کو علم نہیں تھا یا پھر مسلم لیگ ن کے وکیل شاہد حامد کے ذریعے میڈیا تک پہنچائے گئے ہیں اوراسی وجہ سے کچھ لوگ رپورٹ پر اپنے تحفظات کا اظہار بھی کررہے ہیں۔جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ کے مندرجات میڈیاکے ہاتھ آنے پرسینئر صحافی حامد میر نے انکشاف کیاکہ سیکریٹری لاءاینڈ جسٹس ریٹائرڈ رضانے کہا ہے کہ ا±نہوں نے جوڈیشل کمیشن کی سیل رپورٹ وفاقی حکومت کو ارسال کی ہے اور اس کے مندرجات سے متعلق معلوم نہیں۔حامد میر نے اپنے ٹوئیٹس میں لکھاکہ مسلم لیگ ن کے وکیل شاہد حامد جوڈیشل کمیشن رپورٹ کا بڑا ذریعہ ہیں ، دوسراسیکریٹری لاءہیں لیکن وہ بہت محتاط ہیں ،جوڈیشل کمیشن نے سیل رپورٹ وزیراعظم کو بھجوائی ہے
مزیدپڑھیے:افتخارمحمدچوہدری کی سیاست میں آنے کی تیاریاں
اورانہوں نے کبھی نہیں پڑی حتیٰ کہ یہ کوئی پبلک ڈاکیومنٹ نہ ہوتو، اگر وزیراعظم ہاﺅس تک پہنچنے سے پہلے رپورٹ میڈیا تک پہنچ گئی ہے تو سسٹم میں کچھ خرابی ہے ، وفاقی حکومت کے ذرائع نے دعویٰ کیاکہ شاہد حامد نے کبھی رپورٹ نہیں دیکھی لیکن اس رپورٹ کے بارے میں وزیراعظم جمعرات کے روز اہم بیان جاری کرسکتے ہیں ۔

loading...

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں