اہم خبریں

جوڑوں کا درد دور، فوری زخم بھرنے کیلئے یہ پتے استعمال کریں اور پھر کمال دیکھیں،جانئے طریقہ استعمال

  منگل‬‮ 12 جون‬‮ 2018  |  20:45
لاہور(سی ایم لنکس)املی میں طبی خصوصیات ہوتے ہیں، اس سے ہم سبھی واقف ہیں۔ لیکن املی کی پتیاں بھی بیکار اور ضائع نہیں ہیں، کئی ایسے گھریلوں نسخے ہیں جس میں املی کی پتیوں کا استعمال کر صحت کی پریشانیوں سے راحت پا سکتے ہیں۔املی کی پتیوں میں انٹی سیپٹک صلاحیت سے بھر پور ہوتی ہیں۔ املی کی پتیوں کے عرق نکال کر ر زخموں پر لگایا جائے تو وہ زخم کو تیزی سے ٹھیک کرتا ہے۔ املی کے پتوں کاعرق کسی بھی دیگر انفیکشن میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔اس کے علاوہ یہ نئی سیل کی تعمیربھی تیزی سے روکتا

(خبر جا ری ہے)

کی پتیوں کے عرق سے دودھ پلانے والی خواتینوں میں دودھ کے معیار کافی بہترہوتے ہیں۔ املی کی پتیوں کا عرق رپروڈکٹیو ورجن کے انفیکشن کو بھی روکتا ہے۔ اور ا سکے علامت سے راحت فراہم کرنیمیں مددگار ہے۔ املی کی پتی وٹامن سی کا ذخیرہ ہے۔جو کہ کسی بھی طرح کے انفیکشن سے جسم کی حفاظت کرتا ہے۔ جس سے جسم صحت یاب رہتا ہے۔ پتیوں کی کو اور اثر اندآزکرنے کے لئے پپیتا ، نمک اور پانی کو پتیوں میں ملایا جاسکتا ہے۔لیکن یہ یقینی بنائے کہ آپ بہت زیادہ نمک کااستعمال نہیں کرسکتے ہیں۔ املی کی پتیوں میں سوجن کو کم کرنے والی صلاحیت ہوتے ہیں اور جوڑوں کے درد اور دیگر سوجن کے علاج کے لئے استعمال کیا جا سکتا ہے۔ ملتان(سی ایم لنکس)کھانے میں لذت کا اضافہ کرنے کے ساتھ ساتھ یہ مرچ کھانے کی خواہش میں بھی اضافہ کرتی ہے ، گھر کے باورچی خانے سے بڑے بڑے ہوٹل والے اور خوانچہ فروش بھی کھانوں میں کالی مرچ کا استعمال کرتے ہیں۔کالی مرچ ذائقہ بڑھانے سمیت غذاؤں میں اہم جزو کی حیثیت سے استعمال ہوتی ہے۔۔کالی مرچ تیار کیے جانے والے کھانوں کواچھا ذائقہ تو دیتی ہے اس کے ساتھ ساتھ یہ صحت کے لئے بھی بے حد مفید ہوتی ہے۔ کالی مرچ میں سرطانی رسولیوں کے خلاف مزاحمت پائی جاتی ہے جب کہ اس کے علاوہ کا لی مرچ جلدی اور بڑی آنت کے کینسر کا جسم میں پھلاؤ روکنے میں معاون سمجھی جاتی ہے۔کالی مرچ انسانی معدے میں ہائیڈروکلورک ایسڈ کے اخراج میں اضافہ کرتی ہے جس سے ہاضمے کا عمل بہتر ہو جاتا ہے اور غذائیں مناسب طریقہ سے ہضم ہونے کے باعث آپ کبھی بھی قبض کا شکار نہیں ہوں گے۔کالی مرچ جراثیم کے خلاف خصوصیات کے سبب امتیازی اہمیت رکھتی ہے ، یہ آنتوں کو متاثر کرنے والے امراض کے علاج میں مددکرتی ہے۔کھانے میں لذت کا اضافہ کرنے کے ساتھ ساتھ یہ مرچ کھانے کی خواہش میں بھی اضافہکرتی ہے جب کہ برصغیر ہی کیا پوری دنیا میں کالی مرچ ذائقہ بڑھانے حتیٰ کہ غذاؤں میں اہم جزو کی حیثیت سے استعمال ہوتی ہے۔۔کالی مرچ وزن کم کرنے میں بھی مددگار ثابت ہوتی ہے ، کالی مرچ کی اوپر والی تہہ ایسے اجزا سے بھر پور ہوتی ہے جو چکنائی سے بھر پور خلیوں میں کمی واقع کرنے کا سبب بنتی ہے اور بہتر طور پر چربی کو گھلا نے کے لئے مسلسل توانائی فراہم کرتی ہے۔۔پسی ہوئی کالی مرچ کو رنگ صاف کرنے والی کریم میں ملاکر استعمال کرنے سے جلد کے مردہ خلیوں کا خاتمہ کیا جا سکتا ہے جس کے جلد صاف اور چمکدار بن جاتی ہے۔ نزلہ اور زکام کی وجہ سے بند ناک کو کھو لنے ، ڈپریشن میں کمی ، قوت قلب میں اضافہ اور اینٹی آکسیڈنٹس میں اضافہ کے لئے بھی کالی مرچ کا استعمال مفید ہے۔

لاہور(سی ایم لنکس)املی میں طبی خصوصیات ہوتے ہیں، اس سے ہم سبھی واقف ہیں۔ لیکن املی کی پتیاں بھی بیکار اور ضائع نہیں ہیں، کئی ایسے گھریلوں نسخے ہیں جس میں املی کی پتیوں کا استعمال کر صحت کی پریشانیوں سے راحت پا سکتے ہیں۔املی کی پتیوں میں انٹی سیپٹک صلاحیت سے بھر پور ہوتی ہیں۔ املی کی پتیوں کے عرق نکال کر ر زخموں پر لگایا جائے تو وہ زخم کو تیزی سے ٹھیک کرتا ہے۔

املی کے پتوں کاعرق کسی بھی دیگر انفیکشن میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔اس کے علاوہ یہ نئی سیل کی تعمیربھی تیزی سے روکتا ہے۔ املی کی پتیوں کے عرق سے دودھ پلانے والی خواتینوں میں دودھ کے معیار کافی بہترہوتے ہیں۔ املی کی پتیوں کا عرق رپروڈکٹیو ورجن کے انفیکشن کو بھی روکتا ہے۔ اور ا سکے علامت سے راحت فراہم کرنیمیں مددگار ہے۔ املی کی پتی وٹامن سی کا ذخیرہ ہے۔جو کہ کسی بھی طرح کے انفیکشن سے جسم کی حفاظت کرتا ہے۔ جس سے جسم صحت یاب رہتا ہے۔ پتیوں کی کو اور اثر اندآزکرنے کے لئے پپیتا ، نمک اور پانی کو پتیوں میں ملایا جاسکتا ہے۔لیکن یہ یقینی بنائے کہ آپ بہت زیادہ نمک کااستعمال نہیں کرسکتے ہیں۔ املی کی پتیوں میں سوجن کو کم کرنے والی صلاحیت ہوتے ہیں اور جوڑوں کے درد اور دیگر سوجن کے علاج کے لئے استعمال کیا جا سکتا ہے۔ ملتان(سی ایم لنکس)کھانے میں لذت کا اضافہ کرنے کے ساتھ ساتھ یہ مرچ کھانے کی خواہش میں بھی اضافہ کرتی ہے ، گھر کے باورچی خانے سے بڑے بڑے ہوٹل والے اور خوانچہ فروش بھی کھانوں میں کالی مرچ کا استعمال کرتے ہیں۔کالی مرچ ذائقہ بڑھانے سمیت غذاؤں میں اہم جزو کی حیثیت سے استعمال ہوتی ہے۔۔کالی مرچ تیار کیے جانے والے کھانوں کواچھا ذائقہ تو دیتی ہے اس کے ساتھ ساتھ یہ صحت کے لئے بھی بے حد مفید ہوتی ہے۔ کالی مرچ میں سرطانی رسولیوں کے خلاف مزاحمت پائی جاتی ہے جب کہ اس کے علاوہ کا لی مرچ
جلدی اور بڑی آنت کے کینسر کا جسم میں پھلاؤ روکنے میں معاون سمجھی جاتی ہے۔

کالی مرچ انسانی معدے میں ہائیڈروکلورک ایسڈ کے اخراج میں اضافہ کرتی ہے جس سے ہاضمے کا عمل بہتر ہو جاتا ہے اور غذائیں مناسب طریقہ سے ہضم ہونے کے باعث آپ کبھی بھی قبض کا شکار نہیں ہوں گے۔کالی مرچ جراثیم کے خلاف خصوصیات کے سبب امتیازی اہمیت رکھتی ہے ، یہ آنتوں کو متاثر کرنے والے امراض کے علاج میں مددکرتی ہے۔کھانے میں لذت کا اضافہ کرنے کے ساتھ ساتھ یہ مرچ کھانے کی خواہش میں بھی اضافہ

کرتی ہے جب کہ برصغیر ہی کیا پوری دنیا میں کالی مرچ ذائقہ بڑھانے حتیٰ کہ غذاؤں میں اہم جزو کی حیثیت سے استعمال ہوتی ہے۔۔کالی مرچ وزن کم کرنے میں بھی مددگار ثابت ہوتی ہے ، کالی مرچ کی اوپر والی تہہ ایسے اجزا سے بھر پور ہوتی ہے جو چکنائی سے بھر پور خلیوں میں کمی واقع کرنے کا سبب بنتی ہے اور بہتر طور پر چربی کو گھلا نے کے لئے مسلسل توانائی فراہم کرتی ہے۔۔پسی ہوئی کالی مرچ کو رنگ صاف کرنے والی کریم میں ملا

کر استعمال کرنے سے جلد کے مردہ خلیوں کا خاتمہ کیا جا سکتا ہے جس کے جلد صاف اور چمکدار بن جاتی ہے۔ نزلہ اور زکام کی وجہ سے بند ناک کو کھو لنے ، ڈپریشن میں کمی ، قوت قلب میں اضافہ اور اینٹی آکسیڈنٹس میں اضافہ کے لئے بھی کالی مرچ کا استعمال مفید ہے۔

موضوعات:

loading...